نیب کی حراست میں خورشید شاہ کی طبعیت بھی خراب، اسپتال منتقل –

اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ گرفتار ہوتے ہی نیب کی حراست میں بیمار پڑ گئے، طبیعت خراب ہونے پر انھیں پولی کلینک منتقل کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق نیب کی حراست میں خورشید شاہ کی طبیعت خراب ہونے پر پولی کلینک کے سی سی یو میں ان کا ابتدائی طبی معائنہ کیا گیا، ذرایع کا کہنا ہے کہ خورشید شاہ کی ای سی جی، ٹراپ ٹی ٹیسٹ نارمل نکلا۔

اسپتال ذرایع کے مطابق شعبہ امراض قلب کے ڈاکٹرز نے خورشید شاہ کی حالت تسلی بخش قرار دے دی ہے۔

ذرایع نے مزید بتایا کہ خورشید شاہ کو دھڑکن کی بے ترتیبی، سانس اور معدے میں تکلیف ہے، ڈاکٹرز نے پی پی رہنما کے دیگر اہم ٹیسٹ بھی کرانے کا فیصلہ کیا جس کے لیے انھیں اسپتال میں داخل کر لیا گیا۔

تازہ ترین:  خورشید شاہ کا21 ستمبر تک راہداری ریمانڈ منظور

یاد رہے کہ گزشتہ روز نیب سکھر اور راولپنڈی نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے آمدن سے زاید اثاثہ جات کیس میں خورشید شاہ کو گرفتار کر لیا تھا، اس سے قبل ان سے اثاثوں کی تفصیلات طلب کی گئی تھیں اور منی لانڈرنگ کے سلسلے میں تحقیقاتی سوال نامہ بھی دیا گیا تھا۔

آج احتساب عدالت نے گرفتار پی پی رہنما کا دو روزہ راہ داری ریمانڈ منظور کر لیا ہے، تاہم نیب نے عدالت سے خورشید شاہ کا 7 روزہ راہ داری ریمانڈ دینے کی استدعا کی تھی۔

گزشتہ روز خورشید شاہ کی گرفتار کے بعد سکھر میں شر پسند عناصر نے ہنگامہ آرائی کر کے زبردستی دکانیں بند کرائیں، سڑکوں پر نکل کر ٹریفک معطل کیا، جس پر شہر میں سیکورٹی الرٹ جاری کیا گیا۔

Comments

comments




Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *