کشمیرسے آنے والی اطلاعات تشویش ناک ہیں، ٹونی کارڈیناس –

واشنگٹن: امریکی کانگریس کے رکن ٹونی کارڈیناس کا کہنا ہے کہ کشمیریوں کو اشیائے خوردونوش سمیت پانی، اسکولوں، رابطوں کی رسائی دینا ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر امریکی کانگریس کے رکن ٹونی کارڈیناس نے اپنے پیغام میں کہا کہ امور خارجہ کی ذیلی کمیٹی کا کشمیر پر اجلاس بلانا خوش آئند ہے۔

ٹونی کارڈیناس نے کہا کہ کشمیرسے آنے والی اطلاعات تشویش ناک ہیں، کشمیریوں کو اشیائے خوردونوش سمیت پانی، اسکولوں، رابطوں کی رسائی دینا ہوگی۔

امریکی کانگریس کے رکن نے اپنے پیغام میں مزید کہا کہ کشمیر کا مسئلہ پاکستان، بھارت اور کشمیری مل کر حل کرسکتے ہیں۔

مقبوضہ کشمیرمیں 38ویں روز بھی کرفیو

مقبوضہ کشمیر میں آج مسلسل 38ویں روز بھی کرفیو برقرار ہے اور مواصلات کا نظام مکمل پر معطل ہے، قابض انتظامیہ نے ٹیلی فون سروس بند کررکھی ہے جبکہ ذرائع ابلاغ پرسخت پابندیاں عائد ہیں۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مواصلاتی نظام کی معطلی، مسلسل کرفیو اور سخت پابندیوں کے باعث لوگوں کو بچوں کے لیے دودھ، زندگی بچانے والی ادویات اور دیگر اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

یاد رہے کہ پانچ اگست کو مودی سرکار نے کشمیر کو خصوصی حیثیت دینے والے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اے کو ختم کردیا تھا۔

راجیہ سبھا میں بل کے حق میں 125 جبکہ مخالفت میں 61 ووٹ آئے تھے، بھارت نے 6 اگست کو لوک سبھا سے بھی دونوں بل بھاری اکثریت کے ساتھ منظور کرالیے تھے۔

Comments

comments




Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *